Moawin.pk is an educational web portal which provides a comprehensive platform to Pakistani students, parents, teachers and career seekers.

 

صحت مند غذا صحت مند زندگی

صحت مند غذا صحت مند زندگی

ہمارے ہاں زیادہ تر خواتین اپنی صحت کا خیال نہیں رکھتیں۔ وہ سارا دن گھر کے کاموں میں مصروف رہتی ہیں۔ اور اگر پیشہ وارانہ زندگی گزار رہی ہیں تو پھر ان زندگی اور بھی مصروف ہوتی ہے۔ پاکستان میں عورتوں کی طبعی عمر مردوں کے مقابلے میں زیادہ ہوتی ہے۔ یقینا زندگی اور موت اللہ کے ہاتھ میں ہے۔ ہم ایک سانس کم اور زیادہ نہیں لے سکتے لیکن اس کے باوجود ایک اچھی صحت کو برقرار رکھنے کے لیے صحت مند غذا اپنی جگہ مسلم اہمیت رکھتی ہے۔ اور ہم اپنی غذا کو کئی طریقوں سے بہتر بنا سکتے ہیں۔ یہاں ہم کچھ ایسی غذاؤں کا ذکر کریں گے جن کو روزانہ مرہ کے کھانے میں اگر معمول بنایا جائے تو نہ صرف صحت اچھی رہتی ہے بلکہ آپ بغیر تھکن محسوس کیے دن بھر کام کر سکتے ہیں۔

دہی: دہی کا استعمال تو ویسے بھی روزمرہ کے کھانوں میں عام طور پر کیا جاتا ہے۔ اس میں پروٹین، کیلشیم، امینو ایسڈ کی وافر مقدار پائی جاتی ہے۔ اس میں موجود مفید بیکٹیریا معدے کو تقویت پہچانتے ہیں اور کیونکہ یہ غذائیتی سے بھرپور ہوتا ہے لہذا گلے کے متعدد امراض میں اس کا کھانا مفید ہوتا ہے۔ دہی ہمارے جسم کو بہترین قوت مدافعت دیتا ہے۔ جاپان میں حال ہی میں کی جانے والی ایک تحقیق کے مطابق یہ بات ثابت ہوئی ہے کہ دہی کا استعمال جسم میں موجود ہائیڈروجن سلفائیڈ کو ختم کرتا ہے جو کہ منہ کی بدبو کا باعث بنتے ہیں۔

پالک: ایک غذائیت سے بھرپور سبزی ہے اور اس کو ہرے پتوں والی سبزی بھی کہا جاتا ہے۔ اس میں بیٹا کیرونیٹ پایا جاتا ہے جو کہ نہ صرف انسانی دل کے لیے بہت مفید ہے بلکہ دل کے کئی امراض اور کینسر جیسے موذی مرض سے بھی بچانے میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔ پالک کے سبز پتوں میں منرلز، فائبر اور فولک ایسڈ پایا جاتا ہے اور یہ ان خواتین کے لیے بہت مفید ہوتا ہے جو کہ زچگی کے مراحل میں ہوں۔ یاد رکھیں کہ پالک صرف اسی وقت بھرپور غذائیت فراہم کرتی ہے جب اس کو سٹیم کر کے پکایا جائے اور مصالحوں میں نا بھونا جائے۔ پالک آنکھوں کی بیشتر بیماریوں کے لیے اکیسر ہے۔

سلیمن مچھلی: یوں تو مچھلی کی افادیت مسلم ہے۔ لیکن سلیمن مچھلی صحت کے لیے زبردست قوت فراہم کرتی ہے۔ اس میں او میگا تھری فیٹی ایسڈز بھرپور موجود ہوتے ہیں۔ ایک حالیہ تحقیق کے مطابق اومیگا تھری ایسڈ دل کے امراض سے بچائے رکھنے میں بہت اہمیت رکھتا ہے۔ ہفتے میں ایک بار مچھلی کا استعمال ضرور کرنا چاہیے۔ اومیگا تھری فیٹی ایسڈز نہ صرف دل بلکہ دماغ کی صحت کو بھی برقرار رکھتا ہے۔ اسکول جانے والے بچوں کو مچھلی ضرور کھانی چاہیے اس سے ان کی نشوونما میں بہت تیزی آتی ہے۔

خشک میوہ جات: خشک میوہ جات انرجی سے بھرپور ہوتے ہیں۔ اور ان میں کولیسٹرول کی مقدار بہت کم سطح پر ہوتی ہے۔ لیکن خشک میوہ جات میں موجود قدرتی چکنائی کسی بھی خرابی کا جسم میں جا کر باعث نہیں بنتی بلکہ یہ جسم کو اندرونی طور پر گرم رکھتے ہیں۔ گری دار خشک میوہ جات جیسا کہ بادام، اخروٹ، پستے میں بی کمپلیکس اور ضروری وٹامنز سلینیئم، کیلشیم، فاسفیٹ، پوٹاشیم، آئرن اور میگنیشیم وافر مقدار میں موجود ہوتے ہیں۔ خشک میوہ جات کا استعمال دل کے امراض میں بچاؤ کرتا ہے اور دل کے دورہ کے امکانات 70 فیصدی تک کم کر دیتا ہے۔

سیب: روزانہ ایک سیب رکھے ڈاکٹر سے دور۔ سیب کی افادیت سے کوئی انکار نہیں کر سکتا۔ اس میں تمام تر ضروری وٹامنز موجود ہوتے ہیں۔ یہ ہمارے دل کو صحت مند رکھتا ہے اس کے علاوہ صبح کے وقت سیب کا استعمال جسم کو سارا دن چست رکھتا ہے۔ سیب کو اگر چھلکے سمیت کھایا جائے تو اس کی افادیت اور بھی زیادہ بڑھ جاتی ہے۔ اس لیے روزانہ ایک سیب کو اپنی غذا کا معمول بنانا چاہیے۔



Tags

Food , Healthcare


Comments




Write for us - www.moawin.pk

© Moawin, All rights reserved
Design & Developed by: Mark1technologies