Moawin.pk is an educational web portal which provides a comprehensive platform to Pakistani students, parents, teachers and career seekers.

 

ایک ہزار سے زائد قیدی علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی سے کورسز کریں گے

ایک ہزار سے زائد قیدی علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی سے کورسز کریں گے

اگر کوئی فرد کسی جرم کی بنا پر جیل میں قید ہے تو اس کا مطلب یہ ہر گز نہیں ہے کہ اس کو اپنی تعلیم جاری رکھنے کا حق نہیں ہے۔ اسی وجہ سے ملک بھر سے ایک ہزار سے زائد قیدیوں نے جو مختلف جیلوں میں ہیں نے علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی کے متعدد کورسز میں داخلہ لینے کی خواہش ظاہر کر دی ہے۔ یہ کورسز جیلوں میں قیدی لوگ فاصلاتی نظام تعلیم کے ذریعے کریں گے۔ علامہ اقبال پوے پاکستان میں ورکشاپس کے ذریعے اور فاصلاتی نظام تعلیم کے ذریعے تعلیم کو فروغ دے رہا ہے اور اعلی تعلیم اور ریسرچ کی ترقی کو یقینی بنا رہا ہے۔  اس حوالے سے اس خبر کا حوالہ علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر شاہد صدیقی نے ایک میٹنگ کے دوران بتایا کہ علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی جیلوں میں قید افراد کی مزید تعلیم کے لیے اقدامات کرے گی اور ان کو فاصلاتی نظام تعلیم کے ذریعے اعلی اور معیاری تعلیم کی سہولت دے گی۔

اس حوالے سے یونیورسٹی نے انتظامات اور اقدامات کا سلسلہ کافی پہلے ہی شروع کر دیا ہے۔ اور پچھلے سال 2017 میں خزاں سمسٹر کے لیے بہت سارے قیدیوں کی رجسرٹریشن کے انتظامات کو مکمل کیا۔ اور ان کو ان کی پچھلی تعلیمی قابلیت کی بنا پر مزید اعلی تعلیم حاصل کرنے کے مواقع فراہم کیے ہیں۔ اس طرح وہ جیل میں رہتے ہوئے نہ صرف اپنی مزید تعلیم کو پورا کر سکیں گے بلکہ جب وہ اپنی بقیہ سزا پوری کر کے جیل سے رہا ہوں گے تو ان کو ان کی اس تعلیمی قابلیت کی بنا پر ڈپلومہ اور سرٹیفیکیٹس بھی دیے جائیں گے۔ تاکہ وہ جب اپنی سزا مکمل کر کے جیل سے باہر آئیں تو معاشرے میں باعزت شہری کی طرح اپنی اگے کی زندگی گزار سکیں اور روز گار بھی حاصل کر سکیں۔ وائس چانسلر نے اس حوالے سے مزید یہ بتایا کہ یونیورسٹی جیلوں میں تعلیم کے فروغ کے لیے مسلسل کام کر رہی ہے اور جیلوں میں تعلیم کے معیار کو مزید بہتر بنانے کے تمام تر ضروری اقدامات کیے جا رہے ہیں۔

ہم سب ہی یہ جانتے ہیں کہ علاقہ اقبال اوپن یونیورسٹی پاکستان کی ایک قدم تعلیمی درسگاہ ہے اور علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی پورے ملک میں اعلی تعلیم اور ریسرچ کے معیار کو معیاری بنانے کے لیے کوشاں رہی ہے۔ اور اس یونیورسٹی کے طلباء کی تعداد اس کی معیاری تعلیم کی بنا پر تقریبا ہر سال بڑھ رہی ہے۔ اب تک ہزاروں کی تعداد میں طلباء اور طالبات اس یونیورسٹی سے گریجویٹ ہو چکے ہیں اور معاشرے میں با عزت زندگی گزار رہے ہیں اور اعلی روز گار بھی حاصل کر چکے ہیں۔ یونیورسٹی کی ہمیشہ سے یہ کوشش رہی ہے کہ وہ تعلیم کے میدان میں اپنے طلباء کو زیادہ سے زیادہ سہولتیں مہیا کر سکے تاکہ یہاں سے فارغ التحصیل ہونے والے طلباء عملی زندگی میں بہتر روز گار حاصل کر سکیں۔ اور اسی حوالے سے اوپن یونیورسٹی جس طرح پاکستان بھر کے جیل خانوں میں قید افراد کی مزید تعلیم کے لیے اقدامات کر رہی ہے وہ بھی قابل تحسین ہیں۔



Tags

Education , University


Comments




Write for us - www.moawin.pk

© Moawin, All rights reserved
Design & Developed by: Mark1technologies